عالمی ہفتہ براےٌ حفاظتی ٹيکے , کتنےمحفوظ بحث جاری ہے...?.??.Vaccine Debate Continues

:2017ورلڈاميونایٔزيشن ويک
يعنی” عالمی ہفتہ براےٌ حفاظتی ٹيکے” منايا جارہا ہے اس کو منانے کا مقصد وبایٔ بيماريوں سے بچاؤ کيليے حفاظتی ٹيکوں کے بارے ميں آگاہی پھيلانا ہے  مگرچونکہ اس کا تعلق بچوں کی صحت سے ہے تو يہ اخلاقی اور انسانی ذمہ داری حکومتی اداروں پربھی عائدہوتی ہے کہ وہ ہر پہلو سے آگاہی ديں چاہے وہ
!مثبت ہو يا  منفی
    

:حفاظتی ٹيکے /اميونایٔزيشن

عام زبان ميں ویکسين کہا جاتا ہے
ُپاکستان ميں زيادہ ترلوگ صرف پوليو ويکسين سے ہی واقف ہيں اور پچھلے کچھ سالوں ميں تو اقوام  متحدہ کے دباؤ کی وجہ سے پاکستان آنے والےغير ملکی مسا فروں کوبھی پوليو کے قطرے لينے پڑے
                                                     
کيا تمام ويکسين  مکمل طور پر بے ضرر ہيں ؟؟

بظاہر ويکسين ايک بہت اچھی طبی ايجاد سمجھی جاتی ہيں اورماضی ميں بہت
سے وبایٌ امراض کو بڑھنے سے پہلے ہی روکنے يا ان کی شدت کو کم کرنےميں مددگارثابت ہو چکی ہے مگر پچھلی کیٌ دہایٔيوں سے ويکسين مغربی ممالک ميں متنازع مسٔلہ بن گيا ہے جو اس سے متعلقہ ان ممالک ميں بہت سیتبديليوں کی وجہ بھی بناـ بحر حا ل ا بھی  تک يہ بحث جاری ہے ان سب باتوں کے باوجود  ترقی
يافتہ ممالک ميں لازمی اميونایٔزيشن کا قانون لاگو ہے بچوں کا سکول ميں داخلہ اسکے بغير ممکن نہيں اور وہاں پر ہی بچوں کو سکول ميں داخل کرانا والدين کيلۓ قانونی طور پر لازم ہے اور اس پر  عمل نہ کرنے والے افراد حوالات کی ہوا بھی کھا سکتے ہيں



"لازمی اميونایٔزيشن کا قانون" بحث جاری ہے....



" ويکسڈ دامووی"   vaxxedthemovie@
ان کے فيس بک پيج پرويکسڈ دامووی کے بارے ميں لکھا ہے کہ

سی ڈی سی (سينٹر آف ڈيزيز کنٹرول) امريکی ادارے کے ايک سينرٔ سانٔسدان نے
 2014ميں بائيولوجسٹ ڈاکٹر برائن ہکر کو فون کيا کہ 2004ميں  انکی
سربراہی ميں ہونے والی  سٹڈی   جو أيم أيم آر اور آٹزم کے بارے ميں  تعلقکے شبہات کی وضاحت کے ليے کی گیٔ تھی ڈاکٹر وليم تھامپسن نے يہ
اعتراف کيا کہ سی ڈی سی کے ادارے نے اس رپورٹ کے بہت سے اہم
حصوں کو حذف کرديا تھا جو آٹزم اور أيم أيم آر کے درميان تعلق کو ثابت
کرسکتے تھے۔ اگلے کیٔ ماہ ڈاکٹر ہکر نے ڈاکٹر تھامپسن  کی کالز کو
ريکارڈکيا جن ميں اس نے اپنے کوليگز کیطرف سے ضائع کیا جانے والا
انتہای خفيہ مواد فراہم کيا
ڈاکٹر ہکر نے ايک برطانوی ڈاکٹر ويک فيلڈ کو اپنی تحقيق ميں شامل کياجو
پہلے ہی 1998ميں آٹزم اور ايم ايم آر کے تعلق پر آؤاز اٹھانے پہ ويکسين کی
مخالفت کا غلط الزام سہ چکے ہيںٴ  اوربچوں کی صحت کيلئے آواز
اٹھاتےہوئے انہوں نے يہ ايک دستٓا ويزی فلم ان شواہد کا جائزہ لينے کيليے
بنائی جو ايک امريکی شہريوں کی صحت ک ذمہ دار حکومتی ادارے کی  اس
سچ کو پوشيدہ رکھنے کی  بہيمانہ حرکت کو واضح  کرتی ہےـ اس ميں
ويکسين سے متاثرہ بچوں کے والدين، ڈاکٹر، دواساز اداروں کے اندرونی
مخبرنے ايک بہت چونکا دينے والے دھوکے سے پردہ اٹھايا جو کہ ناصرف
آٹزم  ميں اضافہ کا سبب بنا خدشہ ہےکہ اس  دور کی سب سے تباہ کن وبا
ثابت ہو سکتا ہے

پاکستان کيا حکمت عملی اپنائے؟؟؟

پاکستان ميں ابھی تک لازمی ويکسين پر زيادہ زور نہيں ديا جاتا سواۓ پوليو
ويکسين کے جو حکومت أقوام متحدہ کے احکامات کی وجہ سے ملک گير مہم
کی صورت ميں چلا رہی ہے۔ کچھ رجحان لازمی حفاظتی ٹيکوں کی طرف
جاتا نظر آ رہا ہے بہرحال اس بدلتی ہویئ دنيا ميں پاکستان سميت  کویئ بھی
ملک عوام پر اثرانداز ہونے والے اقدامات بغير کسی مقٓامی ضرورت اور
اسکے اچھے اور برے دونوں پہلووں کو جانچے بغير اٹھانے کا متحمل نہيں ہو
سکتا. ويکسين کے بارے ميں بحث اور تحقيق ,عالمی سطح پر جاری رہنی چاہيے
پاکستان کو اپنی مشاہداتی ٹيميں تشکيل دينی چاہيے جو ويکسين سے متعلقہ
واقعٓات اور بچوں کی حفاظت, صحت کو اول رکھتے ہوۓ سفارشات دے
اس کام کيليۓ عام افراد جو۔تجربہ کار، باشعور ہوں اور عالمی اور مقامی اور
بالخصوص پاکستانی معاشرت  پر گہری نظر رکھتے ہوں کی خدمات لی جا
- سکتی ہيں

Comments