Skip to main content

انسانیت پہلے! دنیا کو اب پھر ایک نئی راہ متعین کرنا ہوگی

New Normal with Covid19 !

تقریباً ستر برس پہلے دوسری جنگ عظیم کے بعد عالمی قائدین نے  انسانی حقوق سے متعلق بہت سےمہا عد ے کیۓ تھے جن کی وجہ سے یہ امید قایم  ہوئی تھی کہ اب دنیا ایسی غلطی کبھی نھیں دہراے گی ا ور اگر کچھ ممالک ایسا کرنا بھی چا ہین گے تو  انسانی حققوق کے مشترکہ ادارے انھیں ایسا کرنے سے روکنے پر قا در ہوں گے ...، مگر ایسا کچھ نھیں ہوا انسانی حقوق کی جتنی  پامالی اس عرصے میں ہوئی اسکی مثال نھیں ملتی ، تیسری جنگ عظیم سے خوف دلاتے دلاتے انسانون پر درجنوں چھوٹی جنگیں مسلط کی گیں ، جنکا مشترکہ دورانیہ دوسری جنگ عظیم سے زیادہ  ہے ، لوگ غربت ،خوف ، ہجرت ا ور جنگ میں پوری زندگیاں گزا ر رہے ہیں ا ور اقوا م متحدہ کی بے بسی سب پر پر عیاں ھوتی گی، 



 دانشورا  ور ناقدین پہلے سے یہ بات کہتے  آ رہے ہیں کہ ایسا

لگتا ہے کہ اقوام متحدہ ا ور اس کے ذیلی ا ور منسلک  اداروں کا مقصد امیر اور طاقت وار قوموں کو دنیا میں اپنی طاقت کو مزید بڑھانے کا  ہے، ابھے تک کسی ترقی یافتہ ملک کو انکی کارکردگی سے شکایات بھی نھیں ہوئی تھی ، تاہم  اس بار WHO عالمی ادارہ بر ا ے صحت کی "عدم کا رگردگی" نے پوری دنیا کو جب "کرونا " کی وبا میں مبتلا کر دیا  تو بڑے ممالک بھی چیخ اٹھے …. اس وبا کے پھیلاؤ ، عدم تحقیق ، کا زمہ دار عالمی ادارہ صحت نہیں تواور کون ہے ؟؟

 لیڈرشپ ، قایدین ، حکومت، ادارے ، کار وبار  ا ور ٹیکنالوجی کی ترقی یہ سب ایک مقصد کے لئے بنا ے جاتے ہیں ، کہ وہ انسان کے لئے سہولت ور بھلا ئی پیدا کرے  انھیں منظم رکھے ، مگرمعاشی ترقی کی دوڑ میں یہ " واحد نقطہ "  سب نے بشمول انسانی بھلائی ا  ور بحالی کے اداروں نے بھی نظر انداز کر دیا ، ان اداروں کی  انسانی صورت حال کی بحالی کی ہر کوشش ہمیشہ بہت آہستہ ا ا ور امن کی کوششیں آتے میں نمک کے برابر رہیں ، ….

بعد از  " کورونا" اب وقت  کا تقاضہ ہے کہ عالمی دنیا  انسا نیت , انسانو ں کی بقا کی اہمیت ، اور  ملکی سطح پر ایک خود مختار سوچ ،عمل ا وررویے  کی اہمیت کو سمجھیں! 

 سب  ملکوں کو خصوصاً  پسماندہ تیسری دنیا کے ممالک کو اپنے اپنے طور پر یہ فیصلہ کرنا ہوگا کہ وہ  پھر سے اسی نہج پر چل پڑیں گےاور پہلے کی طرح فوری معاشی فوآید کے لئے آنے والے  مستقبل کو خطرے میں ڈالیں گے ؟؟ یا اپنا راستہ خود منتخب کریں گے جس میں ماحولیات ، علاقا ی ہم آہنگی ہو ، بنیادی  انسانی حققوق کی فراہمی یقینی ہو ، علاج، تحقیق ، ملکی کے پیسے میں برا حصہ ہو، تعلیم لازمی اور اس میں سب کی شمولیت   یقینی ہو  

سوشل میڈیا کے اس دور  میں " فن پیج " کے ذریعے  کچھ بھی

 تاثر دیا جا سکتا ہے مگر حکومتوں ، انسانی حقوق کی    بحالی کے اداروں کو اگر اپنی اہمیت برقرار رکھنی ہے تو انھیں خصوصاً  اپنی کارکردگی پر توجہ دینی ضروری ہے نہ کہ وہ ہمیں ہاتھ دھونے کے طریقے بتانے"donations" کی اپیل کرتے نظر آئیں





 






 ؟


 دنیا  کو اب نئی  راہ متعین کرنا ہوگی  ؟




Comments

Popular posts from this blog

Best Rehabilitative Work in Pakistan : Paraplegic Center Peshawar

پیراپلیجیک سنٹر کے متعلق اب تک کی سب سے بہترین ڈاکومینٹری۔

دیکھئیے اور دوستوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں




Paraplegic Center Peshawar  "PCP” is an autonomous body working under the umbrella of the department of Health, Govt of KP, providing free of cost, “Comprehensive Physical Rehabilitation Services” to people with spinal cord injuries from KP, FATA & the rest of the country.

INTRODUCTION "Paraplegic centre Peshawar, is an autonomous body working under the umbrella of the department of health, Govt of Khyber Pakhtunkhwa, providing free of cost, “Comprehensive Physical Rehabilitation Services” including, Skilled Physiotherapy, Occupational Therapy, Orthotic Management, Psychological Counseling, Recreational Activities, Skills Building, Community Re-Integration, provision of Custom Made WheelChairs, Adoptive/ Supportive equipments and Follow Up Services including minor home modifications along with Medical and Nursing care of people with Post Traumatic Spinal Cord Injuries from K…

Waqas Ahmed Chairman Pace2Life Welfare Foundation in Kasur : Speech on World Disability Day

Waqas Ahmed Chairman  Pace2Life Welfare Foundation: Speech on International Day of PWD at Kasur


قصور میں آج کا دن اسپیشل بچوں کے نام کردیا گیا ۔ ضلع کونسل میں منعقد کی گئی تقریب میں سپیشل بچوں نے ہاتھوں کے اشاروں سے قومی ترانہ اور ٹیبلوز پیش کرکے شرکا سے خوب داد وصول کی اسی پر ملک عارف علی کی رپورٹ دیکھتے ہیں ۔۔۔۔

* Program organized by Abdul Qudoos exective member Pace2life with the colaboration of Govt. Special Education institutes of kasur.

*Welcome tablo presented by govt. Special school for Hearing Impaired kasur

*Tabloo on special achiever of special community presented by govt school for slowlearner kasur

*National anthom presented by special students of all four disabilities especially deaf students in sign language

*Tabloo on Wheels on the bus presented by the students of Govt special education center kasur

*Tabloo on healthy food presented by Govt. Special school for HI Kasur

This World CP Day 2017 StepUp Pakistan Going National to International !